Citizens Committee on the Delhi Riots of February 2020



The Committee has issued a public notice inviting all persons, in confidence, who have information and material pertaining to Delhi riots to send such information and material, in as much detail as possible, to the Committee. You can make a submission here and we will forward it to the Committee on your behalf. The public notice is shown below.




پبلک نوٹس

٢٠٢٠ ١۔ ٢۴


فروری ٢٠٢٠ کے دہلی فسادات سے متعلق ایک شہری کمیٹی: سیاق و سباق اور بعد کے حالات


فروری ٢٠٢٠ کے دہلی فسادات سے متعلق واقیات کی جانچ پڑتال کے لئے کانسٹیٹیوشنل کنڈکٹ گروپ (سی
سی جی) Group Conduct Constitutional ((کی دعوت پر ایک کمیٹی کی تشکیل دی گئ ہے۔ (دیکھیں
com.constitutionalconduct://https (اس کمیٹی میں عوامی عہدوں پر فائز سابق اعلی افسران جیسے
جسٹس مدن بی لوکور، سپریم کورت کے سابق جج (چیئرمین)؛ جسٹس اے پی شاہ، مدراس اور دہلی ہائ کورٹ
کے سابق جج اور لا کمیشن کے سابق چیئرمین؛ جسٹس آر ایس سودھی، دہلی ہائ کورٹ کے سابق جج؛ جسٹس
ّئ، آی اے ایس (رٹایرڈ)، حکومت ہند کے سابق

انجنا پرکاش، پٹنا ہائ کورٹ کی سابق جج؛ مسٹر جی کے پل
ہوم سکریٹری اور محترمہ میران چڈھا بوروانکر، آی پی ایس ( رٹایرڈ) سابق ڈائرکٹر جنرل، بیورو آف پولیس،
تحقیق اور ترقی، حکومت ہند شامل ہیں۔ کمیٹی کے حوالے سے حسب ذیل شرایطیں ہیں:

١۔ فسادات سے پھلے اور اس کے دوران ہونے والے واقیات کی تفتیش کرنا جس میں ریاستی مشینری کا تشدد سے
نپٹنے، امن و آمان کی بحالی، اور متعلقہ امور کے لئے رد عمل شامل ہیں۔
٢۔ فسادات کی تحقیقات میں پولیس کے رد عمل کا جایزہ لینا۔
َ٣۔ حقیقی اور جعلی دونوں خبروں کے پھیلانے میں مین اسٹریم میڈیا اور سوشل میڈیا کا رول فسادات سی
پھلے، درمیان میں اور بعد میں ہونے والے واقیات پر اثرات کا جائزہ لینا۔
۴۔ فسادات کے متاثرین کی امداد اور احوال پرسی کے لئے شہری انتظامیہ کی کوششوں کا جائزہ لینا۔

کمیٹی اپنی اس فعالیت میں آزادی، غیر جانبداری اور شفافیت کے لئے پر عزم ہے۔ ساتھ ہی یقین بھی دلانا ہے
کہ خود کو دیانتداری کے ساتھ چلائے اور سبھی افراد جو اس کمیٹی کا حصہ ہیں انکا وقار اور احترام کی
پاسبانی کی جائے اور انکی آپسی بات چیت کی رازداری کی حفاظت کی جائے۔

اصولوں کی اس فریم ورق کے اندر، کمیٹی اصل مواد کے اکٹھا کرنے اور جانچ پڑتال کرنے کے ساتھ
ساتھ ان اشخاص سے بھی پوچھ تاچھ کریگی جینکو ان واقیات اور حادثات کا براہ راست علم ہے اور جو کمیٹی
کے دایرہ کار میں آتے ہوں جیسے ایف آی آر، چارج شیٹ اور سرکاری ایجنسیوں کے ذریعہ تیار کردہ دیگر
دستاویزات جیسے صوتی اور تصاویری اور داکومینٹری مواد جن کا زیر تفتیش عمل میں نمایاں رول رہا ہو۔
کمیٹی ان ثانوی مواد کا بھی جائزہ لیگی جو کہ رپورٹ اور اکاونٹ کی حیثیت سے عوامی حلقہ میں پھلے
سے موجود ہیں۔ کمیٹی دہلی فسادات اور اس کے بعد کے واقیات سے متعلق اطلاعات اور مواد کی فراہمی کے
لئے ایک سفارشی پبلک نوٹس بھی جاری کریگی تاکہ ایسے مواد اور اطلاعات کمیٹی کو حاصل ہو جائے۔
حاصل شدہ معلومات کے بنا پر کمیٹی افراد کو مزید تفصیلی بات چیت کے لئے مدعو کر سکتی ہے۔ کمیٹی فعالیت
کے ساتھ دہلی فسادات سے متعلق معلومات اور مواد اکٹھا کر جائزہ لیگی اور ان لوگوں تک رسائی حاصل کریگی
جنکے پاس زیر تفتیش واقیات سے متعلق معلومات یا مواد ہو سکتے ہوں۔

لہذا کمیٹی یہ پبلک نوٹس جاری کرتے ہوئے ان تمام افراد کو پر اعتماد ہو کر مدعو کر رہی ہے جنکے پاس
دہلی فسادات سے متعلق معلومات اور مواد موجود ہیں کہ وہ ایسے معلومات اور مواد زیادی سے زیادہ تفصیل
کے ساتھ کمیٹی کو بھیجیں۔ ان معلومات کے مطالعہ کے بعد کمیٹی ایسے افراد کو انکی شناخت کو خفیہ
رکھتے ہوئے مزید بات چیت کے لئے بلا سکتی ہے۔


یا پوسٹ کو بذریعہ ڈاک جمع کرائیں: دستوری طرز عمل گروپ (سی سی جی) ، کامن کاز ہاؤس ، دوسرا فلور ،
نیلسن منڈیلا مارگ ، وسنت کنج ، نئی دہلی۔ 110070

Please visit https://citizenscommitteeondelhiriots.in/submission-form

جمع کرانے کی آخری تاریخ 10 فروری 2021

براے کرم تمام گذارشات اور انکوائری citizenscommittee2020@gmail.com پر بھیجیں۔


فروری ٢٠٢٠ کے دہلی فسادات سے متعلق شہری کمیٹی کی جانب سے جسٹس ( رٹایرڈ) مدن بی لوکور۔
(چئرپرسن)